،، یکجا کلام ،، زاہد شمسی

برائے یکجا کلام
زاہد شمسی
نمیر شمار 63
کلام

لمحہ لمحہ ساتھ رہیں گے میں اور تم
بن کر تازہ پھول کھلیں گے میں اور تم

جس جنگل میں قرب تماشا کرتا ہے
اس جنگل میں ساتھ چلیں میں اور تم

ہم دونوں کی آنکھیں چھم چھم برسیں گیں
اپنے اپنے جام بھریں گے میں اور تم

دیکھنے والا ہم کو اک محسوس کرے
بس اتنا سا کام کریں گے میں اور تم

اک چھوٹی سی بات کہیں سے آئے گی
اور پھر اس پر خوب لڑیں گے میں اور تم

ہاں اک بات بتاؤ کون سمیٹے گا
ہجر میں ٹوٹ کے جب بکھریں گے میں اور تم

اک دوجے کو جان بنائیں گے زاہد
اک دوجے کا نام نہ لیں گے میں اور تم
زاہد شمسی

اپنا تبصرہ بھیجیں